ڈنمارک: اسلامی تخلیقی تحریک

سنہ ایک ہزار سات سو کے آغاز سے لے کر سنہ ایک ہزار آٹھ سو کے آخیر تک یورپ نے اسلامی دنیا کے فن تعمیر، آرٹ، ادب اور اسی طرح فنون لطیفہ کی کئی دوسری اصناف سے جس طرح استفادہ کیا وہ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں جہاں تک ڈنمارک کا تعلق ہے تو یہ بھی اسلامی تہذیب و تمدن کو جاننے اور اس سے استفادہ کرنے والے یورپی ملکوں میں پیچھے نہیں رہا ۔ اور آج ڈینش معاشرت پر قدیم اسلامی تہذیب و ثقافت کے اثرات جا بجا دکھائی دیتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *